جہاں پر ہماری جبیں آج خم ہے NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah

This Was Read By Users ( 538 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Poetry Page



جہاں پر ہماری جبیں آج خم ہے
یقیناً تمہار ا وہ نقشِ قدم ہے
حضور ﷺآپ کی جب سے نظرِ کرم ہے
مرے دل سے کافور ہر ایک غم ہے

یہ معلوم کرنا ہے جا کر کسی دن
خفا کس لیے مجھ سے شیخِ حرم ہے

اکیلا نہیں غم زدہ مَیں جہاں میں
جسے دیکھتا ہوں وہی چشمِ نم ہے

مَیں ساقی کی آنکھوں سے پینے لگا ہوں
مجھے اب نہیں حاجتِ جامِ جم ہے

پسینے سے اُن کی جبیں ہو گئی تر
جو دیکھا سرِ بزم کھلتا بھرم ہے

اندھیرا جو ہے آج سارے جہاں میں
نَئی روشنی کا یہ لطف و کرم ہے