ملائکہ(فرشتوں) کا بیان NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah

This Article Was Read By Users ( 1765 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Articles Page



٭- فرشتے اجسامِ نوری ہیں،
٭- ﷲ تعالیٰ نے اُن کو یہ طاقت دی ہے کہ جو شکل چاہیں بن جائیں ، کبھی وہ انسان کی شکل میں ظاہر ہوتے ہیں اور کبھی دوسری شکل میں۔

عقیدہ(۱):
٭- و ہ و ہی کرتے ہیں جو حکمِ الٰہی ہے ،
٭- خدا کے حکم کے خلاف کچھ نہیں کرتے، نہ قصداً، نہ سہواً، نہ خطاً،
٭- وہ ﷲ (عزوجل) کے معصوم بندے ہیں، ہر قسم کے صغائر و کبائر سے پاک ہیں۔

عقیدہ (۲):
٭- ان کو مختلف خدمتیں سپرد ہیں،
٭- بعض کے ذمّہ حضراتِ انبیا ئے کرام کی خدمت میں وحی لانا،
٭- کسی کے متعلق پانی برسانا،
٭- کسی کے متعلق ہوا چلانا ،
٭- کسی کے متعلق روزی پہنچانا ،
٭- کسی کے ذمہ ماں کے پیٹ میں بچہ کی صورت بنانا ،
٭- کسیکے متعلق بدنِ انسان کے اندر تصرّف کرنا،
٭- کسی کے متعلق انسان کی دشمنوں سے حفاظت کرنا،
٭- کسی کے متعلق ذاکرین کا مجمع تلاش کرکے اُس میں حاضر ہونا ،
٭- کسی کے متعلق انسان کے نامہ اعمال لکھنا ،
٭- بہُتوں کا دربارِ رسالت میں حاضر ہونا ،
٭- کسی کے متعلق سرکار میں مسلمانوں کی صلاۃ و سلام پہنچانا ، ۔۔
٭- بعضوں کے متعلق مُردوں سے سوال کرنا ،
٭- کسی کے ذمّہ قبضِ روح کرنا ،
٭- بعضوں کے ذمّہ عذاب کرنا،
٭- کسی کے متعلق صُور پُھونکنا
٭- اور اِن کے علاوہ اور بہت سے کام ہیں جو ملائکہ انجام دیتے ہیں۔

عقیدہ( ۳):
٭- فرشتے نہ مرد ہیں، نہ عورت۔

عقیدہ (۴):
٭- اُن کو قدیم ماننا یا خالق جاننا کفر ہے۔

عقیدہ (۵):
٭- انکی تعداد وہی جانے جس نے ان کو پیدا کیا اور اُس کے بتائے سے اُس کا رسول۔

٭- چار فرشتے بہت مشہور ہیں:
٭- جبریل
٭- میکائیل
٭- اسرافیل
٭- عزرائیل علیہم السلام اور یہ سب ملائکہ پر فضیلت رکھتے ہیں۔

عقیدہ (۶):
٭- کسی فرشتہ کے ساتھ ادنیٰ گستاخی کفر ہے،
٭- جاھل لوگ اپنے کسی دشمن یا مبغوض کو دیکھ کر کہتے ہیں کہ ملک الموت یا عزرائیل آگیا، یہ قریب بکلمہ کُفر ہے۔

عقیدہ (۷):
٭- فرشتوں کے وجود کا انکار، یا یہ کہنا کہ فرشتہ نیکی کی قوت کو کہتے ہیں اور اس کے سوا کچھ نہیں، یہ دونوں باتیں کُفر ہیں۔