عقیدت مند لوگ NafseIslam | Spreading the true teaching of Quran & Sunnah

This Article Was Read By Users ( 1979 ) Times

Go To Previous Page Go To Main Articles Page



عقیدت مند لوگ
******************
اسلامی سال کے دوسرے ماہ صفر المظفر میں کئی ایک بزرگ ہستیاں مقبولا نِ بارگاہ خدا کے ایامِ وصال ہیں۔
جن کی یاد میں محافل منعقد کی جاتی ہیں۔ جس میں قرآن پاک کی تلاوت، درود شریف، کلمہ شریف کا ورد اور علماء کرام قرآن و حدیث کی دروس سے حاضرین کی اصلاح فرماتے ہیں۔ ایسی محافل کو عرس کا نام دیا جاتا ہے۔ تقاریب عرس میں جو کچھ ہوتا ہے قرآن وحدیث میں اس کی تائید تو ہے منع نہیں کیا گیا۔ اورپھر عقیدت مند لوگ مزارات اولیاء پر حاضری دیتے ہیں۔ کچھ لوگ تو یاد آخرت کیلئے اور کچھ عقیدت سے حاضر ہو کر اکتساب فیض بھی کر لیتے ہیں۔ جسطرح حضرت خواجہ معین الدین چشتی رحمۃ اللہ علیہ حضرت داتا گنج بخش رحمۃ اللہ علیہ کے مزار پر حاضر ہوئے۔ اکتساب فیض کیا۔ اور یہ فرما گئے ۔

گنج بخش فیض عالم مظہرِ نور خدا
ناقصاں را پیر کامل کاملاں راہ راہنما

علامہ ڈاکٹر محمد اقبال رحمۃ اللہ علیہ نے حضرت مجدد الف ثانی رحمۃ اللہ علیہ کے مزار پر حاضری دی تو کیاخوب فرمایا۔

حاضر ہوا میں شیخ مجدد کی لحد پر
وہ خاک کہ ہے زیر فلک مطلعِ انوار

اس خاک کے ذروں سے ہیں شرمندہ ستارے
اس خاک میں پوشیدہ ہے وہ صاحبِ اسرار

اور اس قدر متاثر ہوئے کہ فیض کی بھیک اس طرح طلب کی۔سبحان اللہ

تین سو سال سے ہیں ہند کے میخانے بند
اب مناسب ہے کہ تیرا فیض ہو عام اے ساقی

تو میری رات کو مہتاب سے محروم نہ رکھ
تیرے پیمانے میں ہے ماہِ تمام اے ساقی

یہ بات اظہر من الشمس ہے کہ مزاراتِ اولیاء پر حاضری دینا اور فیض کا حاصل کرنا اسلاف کا عمل ہے جی ہاں عقیدت مند لوگ صرف مزارات پر حاضر ی ہی نہیں دیتے بلکہ صاحبان مزار کی تعلیمات پر عمل پیرا ہو کر اپنی زندگیوں کو بھی قابل رشک بنالیتے ہیں۔ ان کے مشن کو اپنا کر سرخرو ہو جاتے ہیں۔ آئیے اولیائے کرام کی محبت ،سیرت و تعلیمات کو اپنا کر سچے عقیدت مند لوگوں میں شامل ہونے کی سعی کرتے ہیں۔

از مدیر اعلیٰ
تحریر حافظ محمد عدیل یوسف صدیقی صاحب
اداریہ مجلہ محی الدین فیصل آباد